خلاصہ القرآن : 07 ساتواں پارہ​​

خلاصہ القرآن
Spread the love

الحمد اللہ آج خلاصہ القرآن کا ساتواں پارہ​​ مکمل ہوا۔

خلاصہ القرآن مکمل پڑھیں

اس پارے میں دو حصے ہیں:​

  1. سورۂ مائدہ کا بقیہ حصہ
  2. سورۂ انعام ابتدائی حصہ

(پہلا حصہ) سورۂ مائدہ کے بقیہ حصے میں تین باتیں ہیں:​

  1. حبشہ کے نصاری کی تعریف
  2. حلال وحرام کے چند مسائل
  3. قیامت اور تذکرۂ حضرت عیسیٰ علیہ السلام

 

1۔ حبشہ کے نصاری کی تعریف:

قرآن پاک کی تاثیر بیان کی گئی کہ ملک حبشہ کے بعض عیسائی راہبوں کے سامنے جب قرآن پاک کی تلاوت کی جاتی ہے تو اسے سن کر ان کی آنکھیں آنسوؤں سے تر ہوجاتی ہیں اور وہ ایمان قبول کر لیتے ہیں۔

 

2۔ حلال وحرام کے چند مسائل:

  • ہر چیز خود سے حلال یا حرام نہ بناؤ۔
  • لغو قسم پر مؤاخذہ نہیں، البتہ یمین غموس پر کفارہ ہے، یعنی دس مسکینوں کو دو وقت کا کھانا کھلانا یا انھیں پہننے کے لیے کپڑے دینا یا ایک غلام آزاد کرنا اور ان تینوں کے نہ کرسکنے کی صورت میں تین دن روزے رکھنا۔
  • شراب، جوا، بت اور پانسہ حرام ہیں۔
  • حالتِ احرام میں محرم تری کا شکار کرسکتا ہے، خشکی کا نہیں۔

وصیت :

 جب موت کی کیفیت محسوس کرو ، ناقابل وصیت چیزوں میں وصیت اور دو معتبر گواہ بنا لو۔

چار قسم کے جانور مشرکین نے حرام کر رکھے تھے بحیرہ ، سائبہ ، وصیلہ اور حام۔

 خلاصہ القرآن مکمل پڑھیں

3۔ قیامت اور تذکرۂ حضرت عیسیٰ علیہ السلام

قیامت کے دن اللہ تعالی تمام رسولوں کو جمع کرے گا اور ان سے پوچھا جائے گا کہ جب تم نے ہمارا پیغام پہنچایا تو تمھیں کیا جواب دیا گیا؟ اسی سوال و جواب کے تناظر میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام پر اللہ تعالیٰ اپنے احسانات گنوائیں گے، ان احسانات میں مائدہ والا قصہ بھی ہے کہ حواریوں نے حضرت عیسیٰ علیہ السلام سے کہا کہ اللہ تعالیٰ سے کہو ہم پر ایسا دسترخوان اتارے جس میں کھانے پینے کی آسمانی نعمتیں ہوں، چناچہ دسترخوان اتارا گیا،

ان احسانات کو گنواکر اللہ تعالیٰ پوچھیں گے اے عیسیٰ! کیا تم نے ان سے کہا تھا کہ تجھے اور تیری ماں کو معبود مانیں تو حضرت عیسیٰ علیہ السلام عرض کریں گے میں نے اُن سے اُس کے سوا کچھ نہیں کہا جس کا آپ نے حکم دیا تھا،

یہ کہ اللہ کی بندگی کرو جو میرا رب بھی ہے اور تمہارا رب بھی میں اُسی وقت تک ان کا نگراں تھا جب تک کہ میں ان کے درمیان تھا جب آپ نے مجھے واپس بلا لیا تو آپ ان پر نگراں تھے اور آپ ہر چیز کی خبر رکھتے ہیں، اب اگر آپ انہیں سزا دیں تو وہ آپ کے بندے ہیں اور اگر معاف کر دیں تو آپ زبردست حکمت والے ہیں۔

خلاصہ القرآن مکمل پڑھیں

(دوسرا حصہ) سورۂ انعام کا جو ابتدائی حصہ اس پارے میں ہے اس میں تین باتیں ہیں:​

  1. توحید
  2. رسالت
  3. قیامت

1۔ توحید:

اس سورة میں پہلے اس بات کی طرف اشارہ کیا گیا ہے کہ اگر ہم آپصلی اللہ علیہ وسلم آپ پر کاغذوں پر لکھی ہوئی کتاب نازل کرتے اور یہ اسے اپنے ہاتھوں سے بھی ٹٹول لیتے تو جو کافر ہیں وہ یہی کہہ دیتے کہ یہ تو (صاف اور) صریح جادو ہے۔

پھر آگے چل کر بتایا گیا ہے کہ یہ سوال کرتے ہیں فرشتہ کیوں نہ ہم پر نازل ہوا اللہ فرماتا ہے فرشتہ بھی نازل کر دیا جاتا تو پھر فیصلہ ہوجاتا اور ان کو مہلت بھی نہ ملتی اور اگر ہم فرشتے کو اتارتے تب بھی اسے انسانی شکل میں ہی اتارتے اور جس شبہ میں یہ اس وقت پڑے ہوئے ہیں اسں وقت بھی ایسے ہی پڑے رہتے۔

آگے چل کر اللہ تعالیٰ کی حمد و ثنا اور عظمت وکبریائی خوب بیان ہوئی ہے اور اللہ کی قدرت اور بے شمار نشانیوں کے زریعے دلیل دی گئی جو کائنات میں چاروں اطراف پھیلی ہوئی ہیں۔

2۔ رسالت:

نبی علیہ السلام کی تسلی کے لیے اللہ تعالیٰ نے اٹھارہ انبیائے کرام کا تذکرہ فرمایا ہے:

(۱)حضرت ابراہیم علیہ السلام ، (۲)حضرت اسحاق علیہ السلام ، (۳)حضرت یعقوب علیہ السلام ، (۴)حضرت نوح علیہ السلام ، (۵)حضرت داؤد علیہ السلام ، (۶)حضرت سلیمان علیہ السلام ، (۷)حضرت ایوب علیہ السلام ، (۸)حضرت یوسف علیہ السلام ، (۹)حضرت موسٰی علیہ السلام ، (۱۰)حضرت ہارون علیہ السلام ، (۱۱)حضرت زکریا علیہ السلام ، (۱۲)حضرت یحیٰ علیہ السلام ، (۱۳)حضرت عیسیٰ علیہ السلام ، (۱۴)حضرت الیاس علیہ السلام ، (۱۵)حضرت اسماعیل علیہ السلام ، (۱۶)حضرت یسع علیہ السلام ، (۱۷)حضرت یونس علیہ السلام ، (۱۸)حضرت لوط۔

3۔ قیامت:

  • قیامت کے روز اللہ تمام انسانوں کا جمع کرے گا۔ (آیت:۱۲)
  • روزِ قیامت کسی انسان سے عذاب کا ٹلنا اس پر اللہ کی بڑی مہربانی ہوگی۔ (آیت:۱۶)
  • روزِ قیامت مشرکین سے مطالبہ کیا جائے گا کہ کہاں ہیں تمھارے شرکاء؟ (آیت:۲۲)
  • اس روز جہنمی تمنا کریں گے کہ کاش! انھیں دنیا میں لوٹا دیا جائے تاکہ وہ اللہ رب کی آیات کو نہ جھٹلائیں اور ایمان والے بن جائیں۔(آیت:۲۷)

خلاصہ القرآن کا مطالعہ کریں اور مجھے اپنی دعاٶں میں یاد رکھیں

خلاصہ القرآن مکمل پڑھیں

اسلام کے بارے میں پڑھیں

خلاصہ القرآن:  حضرت مولانا محمد اسلم شیخوپوری شہید رحمۃاللہ علیہ

خلاصہ القرآن مکمل پڑھیں

خلاصہ القرآن مکمل پڑھیں

3 Comments on “خلاصہ القرآن : 07 ساتواں پارہ​​”

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *