کمیونٹی فارمنگ یا مصنوئی اور جعلی اشیاء

کمیونٹی فارمنگ
Spread the love

تحریر: شہزاد حسین

کمیونٹی فارمنگ کیوں؟

فی زمانہ ہر چیز جعلی اور مصنوعی ہوچکی ہے۔ مرغیاں برائیلر بن گئیں، دودھ میں ملاوٹ ہے، سبزیوں کو کیمیکل اور pesticides نے مار رکھا ہے۔ بڑے کے گوشت کا بھی کوئی بھروسہ نہیں۔

اب یہ سب کچھ خالص اور قدرتی چاہیے تو آپ کو اپنے طور پر یہ سب کرنا ہوگا۔ پر گھر پر مرغیاں، گائے بکرے، سبزیوں کی کاشت کرنا اکثریت کے لیے قطعی ممکن نہیں

اسکا ایک حل کمیونٹی فارمنگ “ہوسکتا ہے”

مطلب کے کچھ لوگ مل کر فنڈز کا ایک پول بنائیں۔ اس فنڈنگ سے مل جل ایک زمین لی جائے اور وہاں مرغیوں، گائے، بکرے، دودھ، انڈے، گوشت اور سبزیوں کی organic پروڈکشن کی جائے۔ چیزیں اپنے کنٹرول میں ہوں تو اسے مانیٹر کرنا انتہائی آسان ہوگا اور ہر چیز سو فیصد خالص مل سکے گی۔ بہت سی چیزیں آپ باہر سے لاکر، اسکی بھی پراڈکٹ بناسکتے ہیں مثلاً گنے کا اسٹاک خرید کر اس سے اپنا گڑ اور شکر بنالی جائے۔ وہاں محدود پیمانے پر شہد کی مکھیوں کی فارمنگ بھی کی جاسکتی ہے

یہ بھی پڑھیں: ستّو کے حیرت انگیز فوائد

بہرحال، یہ ایک آئیڈیا ہے جس کی بنیاد organic فوڈ کی بااعتماد سپلائی چین قائم کرنا ہے

اس حوالے سے آپ لوگ بھی اپنی قیمتی آراء سے آگاہ کیجیے تاکہ اس میں موجود سقم کو دور کیا جاسکے، مختلف چیلنجز کو ایڈریس کیا جاسکے اور اس نظام میں مزید بہتری لاکر اسے عملی طور پر ممکن بنایا جاسکے

آپ کے فیڈ بیک کا منتظر۔۔۔۔!!!!

کمیونٹی فارمنگ پر کچھ لوگوں کا تجزیہ

طہیر اقبال سیال:
سیم یہی آئیڈیا میرے ذہن میں ہے کہ پانچ سات بہن بھائی/رشتہ دار/محلے دار مل کر ایک ایکڑ زمین خریدئں اور وہاں ایک دو بھینسیں اور کچھ مرغیاں رکھیں۔ کچھ رقبے پہ سبزیاں کاشت کی جائیں۔

محمد اکرام:
الحمد للہ اسپر کام شروع کیا ہوا ہے دو ایکڑ میں باغ ہے اپسر تجربات کر رہے آرگینک کے جسمیں پہلے بیسل ڈوز کے تجربات کیے جا رہے ہیں اور بہت مثبت نتائج آ رہے .. پھر ایک سیپ آگے کرتے ہوے کل ایک پیسٹیسائیڈ بنایا اسکے ٹرائل شروع کرنے ابھی … یہ آرگینک کمرشل والا نہیں جسمیں جیبوں کو کاٹا جاتا ہے ۔

سلمان:
بات ٹیھک لیکن اگر ایک ادمی ایک ایک چیز انفرادی کرے مثال کے طور پر کمیونٹی میں ایک ادمی مرغی پال لے اس سےایک گاوں کو دیسی مرغی اور دیسی انڈہ ملے گا دوسرہ ادمی بیھنسیں پال تو ایک گاؤں کو حالص دودھ مل سکتاہے انفرادی ہوسکتا ہے یہ ایک چھوٹا حاندان کا کاروبار ہوگا اور شریک کاروبار، تو نہی ہو سکتا. پشتو میں کہاوت ہے. اس کا مطلب ہے کہ زیادہ قصائیوں میں گائے مردار ہوگئی۔

2 Comments on “کمیونٹی فارمنگ یا مصنوئی اور جعلی اشیاء”

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *