ٹوائلٹ کے جنات کے نام

Toilet Care
Spread the love

مکمل پڑھے بغیر گھبرانا نہیں ہے..!
اب سے تیس سال پہلے  میرے پیارے ماموں جان  میاں خالد عبدالروف صاحب  نے ایک کتاب لکھی تھی جس کا نام تھا  “جن “مجھے اس کتاب کی  ایک بات عرض کرنا ہےجن  عربی زبان کا لفظ ہے۔اس کے معنی ہیں پوشیدہ  یعنی انسانی آنکھ کو نظر نہ آنے والی  کوئی بھی مخلوق  جس طرح  ہمیں جن، جنات نظر نہیں آتے  اسی طرح بیکٹیریا جراثیم بھی انسانی  آنکھ کو  نظر نہیں آتے لیکن ہوتے ہیں..!
میرا یہ سوال ہے  کیا بیکٹیریا، جراثیم کو جنات کی کوئی ایک قسم  کہا جاسکتا ہے..؟
فرض کیجئے  جواب ہاں میں آتا ہے  پھر ہم ٹوائلٹ کے بیکٹیریاز جو ایک انچ کی چھوٹی سی جگہ پر تقریباً تین ملین کی تعداد میں ہوتے ہیں  ان جراثیم میں سے چندمشہور و معروف نام یہ ہیں:

  • آنتوں کے بیکٹیریا ،
  • انفلوئنزا ،
  • اسٹریپٹوکوکس ،
  • ای کولی،
  • ہیپاٹائٹس ،
  • میتیسیلن اسٹیفیلوکوکس اوریئس (ایم آر ایس اے) ،
  • سلمونیلا ،
  • شیگللا
  • نوروائرس

آپ ناموں کو بھول جائیں  یہ بات یاد رکھیں کہ ایک ٹوائلٹ پر کئی ہزار اقسام  کے تین ملین سے زائد جراثیم موجود ہوتے ہیں۔

اب ٹوائلٹ کے جنات کی  اتنی بڑی تعداد سے کیسے محفوظ رہا جائے..؟

اَللّٰهُمَّ إِنِّيْ أَعُوْذُ بِکَ مِنَ الْخُبُثِ وَالْخَبَائِثِ.

’’اے اللہ  بے شک میں  خبیث جنّوں اور خبیث جنّیوں سے  تیری پناہ مانگتا ہوں۔‘‘ترجمہ: 

سب سے پہلی حفاظتی ڈھال یہ دعا ہے  جو ہمارے پیارے نبی اکرم  حضرت محمد صل اللہ علیہ والہ وسلم  نے ہمیں پندرہ صدی پہلے سکھا دی تھی  اور دیکھئے اس میں الْخُبُثِ وَالْخَبَائِثِ یعنی  جنات کا واضح طور پر حوالہ موجود ہے۔

اس دعا کے بعد  یہ اہتمام کر سکتے ہیں  منہ، ناک پر رومال، دوپٹہ یا سب سے بہتر ہے۔  ماسک جو خاص طور پر واش روم جانے کے لئے مخصوص ہو استعمال کیا جائے۔  واش روم میں  کوئی کپڑا مثلاً تولیہ، بنیان، پاجامہ قمیض  نہ چھوڑا جائے۔  تولیہ اور دوبارہ پہننے والے کپڑے  باہر لا کر لٹکائے جائیں۔  ٹوائلٹ واش روم کو  ہر روز بہت اچھی طرح دھویا جائے۔  اس کے لئے آپ جو بھی کلینر بہتر سمجھتے ہیں  استعمال کیجئے۔  البتہ ایک اسپرے بوٹل میں  سفید سرکہ وائٹ وینیگر  بھر کر واش روم میں رکھیں۔  ہر استعمال کے بعد سفید سرکہ ٹوائلٹ، ٹونٹی اور بیسن،  پر اسپرے کر کے باہر آئیں۔

واش روم میں ایگزاسٹ فین ضرور لگوائیں۔  جانے سے کچھ دیر پہلے آن کر دیں  اور باہر آنے کے بعد کچھ دیر چلتا رہنے دیں۔  بہتر ہے  صابن، ٹوتھ برش، پیسٹ، باہر رکھیے    ورنہ انہیں اچھی طرح ڈھک کر رکھا جائے  اور استعمال سے پہلے خوب اچھی طرح دھو لیں۔

گیلا تولیہ ہرگز باتھ روم میں نہ چھوڑیں  اور  جب اپنا نیا گھر بنائیں  ٹوائلٹ، بیڈ روم سے دور رکھیں یا ایسا بنائیں۔  جس میں قدرتی روشنی اور ہوا ضرور آتی ہو۔  خیر ہو آپکی، خیر ہو امت کی۔
٢٠ مارچ ٢٠٢٠
#جاوید_اختر_آرائیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *