لبلبہ کی گندگی کو صاف کرنے والے 8 کھانے

لبلبہ کی گندگی کو صاف کرنے والے 8 کھانے
Spread the love

لبلبہ Pancreas انسانی جسم کا ایک انتہائی اہم اعضو ہے جو پیٹ میں معدے کے پیچھے موجود ہوتا ہے۔ یہ ہمہیں زندہ اور صحت مند رکھنے کے لیے انتہائی اہم فرائض سرانجام دیتا ہے یہ کھائی جانے والی خوراک سے انرجی پیدا کر کے جسم کو فراہم کرتا ہے۔

میڈیکل سائنس کے مُطابق لبلبہ جسم میں 2 اہم فرائض سرانجام دیتا ہے 1 یہ ایسے Enzymes پیدا کرتا ہے جو ہمارے کھانے کو ہضم کرتے ہیں اور توانائی میں تبدیل کرتے ہیں اور دوسرا یہ خون میں شوگر لیول کنٹرول کرنے کے لیے 2 انتہائی ضروری ہارمونز پیدا کرتا ہے جس میں انسولین ہارمون جو خون میں بڑھتی ہُوئی شوگر کو کم کرتا ہے اور glucagon ہارمون جو خون میں اگر شوگر لیول کم ہوجائے تو تیزی سے شوگر کا لیول بڑھاتا ہے تاکہ جسم کے دوسرے اہم عضو جیسے دماغ، جگر اور گُردوے وغیرہ متاثر نہ ہوں اور خون میں شوگر کے لیول کو متوازن رکھتا ہے۔

ہماری روز مرہ خوراک میں بے احتیاطی خاص طور پر چکنائی اور چینی کی زیادہ مقدار لبلبہ کے افعال کو کمزور کر دیتی ہے جس سے اس عضو میں Waste جمع ہونی شروع ہوجاتی ہے یہ waste جہاں لبلبے کی خوراک کو ہضم اور جُز بندن بنانے کی صلاحیت کومتاثر کرتی ہے وہاں انسولین اور Glucagon ہارمونز کا راستہ بند کر دیتی ہے اور انسان کو ذیابطیس جیسی خطرناک بیماری کا شکار کرتی ہے۔

اس آرٹیکل میں ہم لبلبہ کی صٖفائی اور اس کے افعال کو بہتر بنانے والے 8 قُدرتی کھانوں کا ذکر کریں گے جنہیں روزمرہ کی خوراک میں شامل کرنے سے اس عضو کی waste خارج ہوتی ہے اور یہ عضو توانا اور فعال ہوتا ہے۔

نمبر 1 ہلدی

ہلدی اور ہلدی پاوڈر ادرک کے خاندان کا ایک پودا ہے جو ہمارے کھانوں کے ذائقے کو جہاں دوبالہ کرتا ہے وہاں اس کا استعمال ہماری صحت کے لیے بہت زیادہ مُفید ہے خاص طور پر لبلبہ کے اندر پیدا ہونے والی گرمی جس سے ہمیں پیٹ میں شدید جلن محسوس ہوتی ہے ہلدی اس کو کم کرتی ہے ہلدی کی اینٹی آکسائیڈینٹ خوبیاں لبلبے کے مُردہ سیلز کی مرمت کرتی ہے اور اسی میں جمی ہوئی آلودگی کو خارج کرتی ہے، ہلدی انسولین ہامونز کی پیدا ہونے کی مقدار بڑھاتی ہے اور شوگر کے امراض کو کنٹرول کرنے میں انتہائی مُفید ہے۔

نمبر 2 لہسن

میدیکل سائنس اس سبزی پر روز نئی تحقیقی روپوٹس نشر کرتی ہے جس کے مُطابق یہ انسانی صحت کو قائم رکھنے کے لیے انتہائی مُفید سبزی ہے جسے خوراک کو ہضم کرنے اور جسم سے فاضل مادوں کے اخراج کے لیے اکسیر مانا جاتا ہے، مگر لہسن کی خُوبیاں خوراک کو ہضم کرنے اور فاضل مادوں کے اخراج پر ختم نہیں ہوتیں کیونکہ لہسن میں موجود اینٹی بائیوٹیک پراپرٹیز کو جب دوسرے کھانوں کیساتھ مکس کیا جاتا ہے تو اس کی افادیت کہیں زیادہ بڑھ جاتی ہے،

خاص طور پر لہسن کو ادرک، شہد، میتھی دانہ، پیاز وغیرہ کے ساتھ استعمال کرنا لہسن کی قابلیت کو کہیں زیادہ بڑھا دیتا ہے اور یہ جہاں جسم کے دوسرے اعضا کے لیے انتہائی مُفید ہے وہاں یہ لبلبے کی صفائی کرکے اُس کو فعال بنانے میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔

نمبر 3 پالک

پالک کے اندر وٹامن بی اور آئرن کی ایک بڑی مقدار شامل ہوتی ہے ۔ وٹامن بی لبلبہ کی پرورش کرتا ہے اورآئرن لبلبے کی سوزش کو کم کرنے میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔

پالک میں موجود MGDG لبلبے کے کینسر کو پیدا ہونے سے روکتا ہے اور میڈیکل سائنس کے مُطابق پالک جسم کو دیگر کئی طرح کے کینسر سے بچانے میں بھی انتہائی مدد گار ہے۔

نمبر 4 بروکلی

گوبھی کی نسل کی یہ سبزی جہاں پروٹین اور وٹامنز سے بھر پور ہے وہاں یہ جسم کو کینسر سے لڑنے میں انتہائی مدد گار ہے یہ سبزی لبلبے کی بہت سے بیماریوں سے محفوظ رکھتی ہے، بند گوبھی ، بروکلی، گوبھی، کیل وغیرہ یہ وہ سبزیاں ہیں جن میں flavonoids پایا جاتا ہے جو جسم سے فاضل مادوں کے اخراج میں اکسیر کا درجہ رکھتا ہے۔

نمبر 5 سرخ انگور

ڈاکٹر لبلبے کے مریضوں کو ہمیشہ سُرخ انگور کھانے کا مشورہ دیتے ہیں کیونکہ سُرخ انگورresveratrol اینٹی آکسائیڈینٹ خوبیوں سے بھرپور ہوتے ہیں ، یہ لبلبے میں سوزش کو کم کرنے کے لیے انتہائی مُفید ہیں اور لبلبے میں پیدا ہونے والے کینسر سے لڑتے ہیں اور آلودگی کو لبلبہ سے نکال باہر کرتے ہیں۔

نمبر6 شکر قندی

طبیب حضرات کا کہنا ہے کے جسم کے مختلف اعضا کی شکل سے ملتی جُلتی سبزیاں اور پھل اُس اعضا کے لیے انتہائی مُفید ہوتے ہیں جیسے ٹماٹر دل سے ملتے ہیں اور دل کو طاقت دیتے ہیں ، اخروٹ کو دماغ کے لیے انتہائی مُفید مانا جاتا ہے اسی طرح شکر قندی لبلبے سے ملتی جُلتی سبزی ہے اورمیدیکل ریسرچ کے مُطابق شکر قندی کھانے سے لبلبے کے اندر کینسر پیدا ہونے کے چانسز 50 فیصد کم ہوجاتے ہیں،

شکر قندی میں glycemic کی کم مقدار خوارک کے اندر موجود شوگر کو خون میں تیزی سے شامل ہونے سے روکتی ہے اور لبلبہ کو کام کرنے میں مدد دیتی ہے۔

نمبر 7 اوریگانو

بہت سی بیماریاں جو Oxidant سے منسلک ہوتی ہیں انہیں اوریگانو کی اینٹی آکسائیڈینٹ خوبیاں ختم کرنے میں انتہائی فعال ہیں، اوریگانومیں موجود anti-hyperglycemic خوبیاں لبلبے کی بہتر کارکردگی کو قائم رکھتی ہیں اور اسے بیمار نہیں ہونے دیتی۔

نمبر 8 Dandelion یعنی ککروندا

ککروندے کا قہوہ جگر اور لبلبہ سے آلودگی کو خارج کر دیتا ہے یہ لبلبے کے خراب ٹیشوز کی مرمت کرتا ہے اور جگر کو Bile جوس بنانے میں انتہائی مدد گار ہے، میڈیکل سائنس کے مُطابق یہ پودا کینسر سے بچانے میں بھی انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔

نوٹ: اگر آپ لبلبہ کی کسی بیماری میں مُبتلا ہیں تو بازاری کھانے زیادہ تیز مصالحے والے کھانے فوراً ترک کردیں اور ہرگز ہرگز الکوحل کا استعمال نہ کریں اور زیادہ سے زیادہ پانی پییں تاکہ یہ عضو جلد سے جلد ٹھیک ہو۔

صحت مند رہنے کے لیے مزید پڑھیں

تلبینہ کااستعمال 100 بیماریوں سے نجات

The Best (and Worst) Foods for Pancreatitis Pain

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *